Home / Uncategorized / اسحاق ڈار خود سے کبھی سائیکل بھی نہ خرید پائے: فواد چودھری
اسحاق ڈار خود سے کبھی سائیکل بھی نہ خرید پائے: فواد چودھری

اسحاق ڈار خود سے کبھی سائیکل بھی نہ خرید پائے: فواد چودھری

13090326_1687432894844740_206848798_n

لاہور(ویب ڈیسک)  فواد چودھری نے اسحاق ڈار کی رقم کے سفر کے پیچھے چھپی کہانی سے پردہ اٹھادیا اور دعویٰ کیا کہ اس کا آغاز 1993 سے ہو اہے جب رحمان ملک کو ڈائریکٹر ایف آئی اے مقرر کیا گیا اور وہ 300 صفحات پر مبنی رپورٹ منظر عام پر لے کر آئے۔ جب نواز شریف حکومت میں آئے تو رحمان ملک کو بیرون ملک فرار ہونا پڑا۔ بی بی سی نے رحمان ملک کی رپورٹ پر ایک ڈاکو مینٹری بنائی جس نے تمام حقائق کا انکشاف کر دیا۔ ان انکشافات کے منظر عام پر آتے ہی اسحاق ڈار نے کہا کہ وہ بی بی سی کے خلاف ہر جانے کا دعویٰ کریں گے لیکن آج تک ایسا نہ ہو سکا لیکن اس کے بعد اسحاق ڈار کے کردار سے ساری دنیا واقف ہو گئی کہ اندرون لاہور سے وہ وزیر خزانہ کیسے بن گئے۔

پروگرام ’خبر کے پیچھے ‘ میں گفتگوکرتے ہوئے میزبان فواد چوہدری کاکہناتھاکہ اسحاق ڈار کے والد چنن دین ڈار کی چونا منڈی میں پان کی دکان تھی ‘ ساتھ ہی وہ سائیکل کرائے پر دیتے تھے۔ اسحاق ڈار کی مالی حیثیت کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ وہ خود کبھی سائیکل بھی نہ خرید پائے ۔ کالج کے دور میں نواز شریف سے ان کی شناسائی ہوئی جو گہرے تعلق میں بدل گئی۔ حکمران خاندان کی دولت بیرون ملک منتقل کرنے میں اسحاق ڈار نے اہم کردار ادا کیا جو گمنام اکاﺅنٹس کے ذریعے لندن بھجوائی گئی۔ بی بی سی ڈاکومینٹری میں سلمان ضیاءکے اکاﺅنٹ کا کھوج لگایا گیا اور بعد میں لندن میں مقیم قاضی فیملی کے اکاﺅنٹس کو استعمال کیا گیا جبکہ حالیہ پانامہ بحران تک ان معاملات کی کڑیاں جاملتی ہیں۔

اُنہوں نے دعویٰ کیاکہ اپوزیشن کی حکومت کے خلاف حکمت عملی پر بات کرتے ہوئے پیپلز پارٹی کے قمر الزمان کا ئرہ کا کہنا تھا کہ وزیراعظم سے استعفیٰ نہیں مانگ رہے لیکن شفاف تحقیقات کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ مسلم لیگ ق کے کامل علی آغا نے کہا کہ وزیراعظم کو مستعفیٰ ہو جانا چاہیے۔متحدہ قومی موومنٹ کے سلمان مجاہد بلوچ کا کہنا تھا کہ ہماری جماعت صرف شفاف تحقیقات کا مطالبہ کر رہی ہے۔

Comments are closed.

Scroll To Top