Home / Uncategorized / امجد صابری قتل کیس، ممکنہ حملہ آور کا خاکہ جاری ہونے پر ایک خاتون میدان میں آگئی،شکوک وشبہات پیداکردیئے
امجد صابری قتل کیس، ممکنہ حملہ آور کا خاکہ جاری ہونے پر ایک خاتون میدان میں آگئی،شکوک وشبہات پیداکردیئے

امجد صابری قتل کیس، ممکنہ حملہ آور کا خاکہ جاری ہونے پر ایک خاتون میدان میں آگئی،شکوک وشبہات پیداکردیئے

کراچی (ویب ڈیسک) معروف قوال امجد صابری کے مبینہ قاتل کا خاکہ جاری ہونے پر گذری کی رہائشی خاتون حمیدہ بی بی سامنے آگئی جس نے سندھ ہائیکورٹ میں دائر کرنے کیلئے تیار کیے گئے دعویٰ میں موقف اپنایا ہے کہ یہ خاکہ اس کے بیٹے ناصر حسین سے ملتا جلتا ہے، جو اڑھائی برس سے لاپتہ ہے۔
خاتون نے یہ بھی دعویٰ کیاکہ اس حوالے سے متعلقہ تھانے میں مقدمہ درج ہے ۔میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے حمیدہ بی بی نے الزام لگایا کہ پولیس اور دیگر اداروں نے پہلے اس کے بیٹے کو اغوا کیا اور اب اسے امجد صابری بھائی کا قاتل بنا کر ظاہر کردیا گیا، خدشہ ہے کہ اس کے بیٹے کو نقصان نہ پہنچاجائے، لہٰذا وہ انصاف کے حصول کے لئے سندھ ہائیکورٹ پہنچی ہیں۔
واضح رہے کہ سندھ ہائیکورٹ میں ہڑتال کی وجہ سے خاتون درخواست دائر نہیں کرسکی۔
روزنامہ امت کے مطابق خاتون یہ بتانے سے قاصر رہی کہ سندھ ہائیکورٹ میں پٹیشن دائر کرنے کا خیال اڑھائی برس بعد کیوں آیا، جب مبینہ قاتل کا خاکہ جاری کیا گیا،تصدیق کرنے پر پتہ چلا کہ متعلقہ تھانے میں ناصر کی گمشدگی کا کوئی مقدمہ درج نہیں۔


اخبارکے مطابق کلفٹن تھانے کے ہیڈ محرر اعجاز نے بتایا کہ ان کے پاس 2014ءسے لے کر اب تک کسی بھی ناصر حسین نامی نوجوان کے اغوا یا گمشدگی کی نہ تو کوئی درخواست آئی ہے اور نہ ہی کسی نے مقدمہ درج کرایا ۔ گذری تھانے کے ایس ایچ او گلزیب سے رابطہ کیا تو انہوں نے بھی ناسر حسین نامی کسی بھی نوجوان کے اغوا یا گمشدگی کی رپورٹ سے انکار کیا۔ انہوں نے کہا کہ ان سے اعلیٰ افسران نے بھی رابطہ کیا تھا اور انہوں نے تھانے کا 2014ءسے اب تک کا تمام ریکارڈ دیکھ کر اپنے اعلیٰ افسران کو بھی آگاہ کردیا ۔رپورٹ کے مطابق ایک تفتیشی افسر کا کہنا ہے کہ حمیدہ بی بی نے دو سال بعد ایک خاکے کو بنیاد بنا کر عدالت سے رجوع کیا ہے، جس نے سارے معاملے کو مشکوک کردیا ، عدالتوں میں جمع کرائی گئیں فہرستوں میں کسی ناصر حسین کا ذکر نہیں ،تفتیش ہونی چاہیے کہ خاتون دوسال سے کیوں خاموش تھی ، حمیدہ بی بی سے رابطہ کرکے انہیں معلومات دینے کا کہا جائے گا۔

Comments are closed.

Scroll To Top