Error. Page cannot be displayed. Please contact your service provider for more details. (26)

Home / Uncategorized / اگر کوئی بھی غیر ملکی یا کفیل اب یہ کام کرتا پکڑا گیا تو سیدھا جیل میں ڈال دیں گے‘ سعودی عرب نے واضح اعلان کردیا
اگر کوئی بھی غیر ملکی یا کفیل اب یہ کام کرتا پکڑا گیا تو سیدھا جیل میں ڈال دیں گے‘ سعودی عرب نے واضح اعلان کردیا

اگر کوئی بھی غیر ملکی یا کفیل اب یہ کام کرتا پکڑا گیا تو سیدھا جیل میں ڈال دیں گے‘ سعودی عرب نے واضح اعلان کردیا

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) ماہ رمضان کے آتے ہی سعودی عرب میں غیر قانونی گھریلو ملازماﺅں کی بھرتی کا سلسلہ بھی عروج کو پہنچ جاتا ہے، لیکن حکومت بھی اس معاملے سے بے خبر نہیں ہے۔ سعودی حکام نے کفیلوں اور غیر ملکیوں کو خبردار کر دیا ہے کہ اس جرم میں ملوث ہونے والوں کو قید اور بھاری جرمانے کی سزا دی جائے گی۔

سعودی گزٹ کے مطابق محکمہ پاسپورٹ نے پیر کے روز خبردار کیا کہ غیر قانونی ملازماﺅں کو اپنے ہاں بھرتی کرنے والے یا تحفظ دینے والے لوگوں کو چھ ماہ قید اور ایک لاکھ سعودی ریال جرمانے کی سزا دی جائے گی، جبکہ کوئی غیر ملکی اس جرم میں ملوث پایا گیا تو اسے ملک بدر بھی کیا جائے گا۔ ایک سے زائد غیر قانونی گھریلو ملازمہ رکھنے والے کا جرمانہ بھی اسی حساب سے بڑھادیا جائے گا۔ غیر قانونی ملازماﺅں کی خدمات فراہم کرنے والی کمپنیوں کو بھی ایک لاکھ سعودی ریال جرمانے، ریکروٹمنٹ پر 5 سالہ پابندی، اور کمپنی کے منیجر کو چھ سال قید کی سزا اور غیر ملکی ہونے کی صورت میں ملک بدری کی سزا بھی دی جائے گی۔
محکمہ پاسپورٹ نے شہریوں اور غیر ملکیوں پر بھی زور دیا ہے کہ وہ غیر قانونی طور پر مقیم افراد کے بارے میں متعلقہ حکام کو فوری طور پر اطلاع دے کر اپنی قانونی ذمہ داری پوری کریں۔
دوسری جانب وزارت لیبر و سماجی ترقی کی طرف سے بھی وارننگ جاری کردی گئی ہے کہ موبائل فون سیلز اینڈ مینٹیننس کے شعبے میں کسی بھی غیر ملکی کو ملازمت دینا جرم تصور کیا جائے گا، اور اس جرم کا مرتکب ہونے والے کفیل کو 20 ہزار سعودی ریال کا جرمانہ کیا جائے گا۔

Comments are closed.

Scroll To Top