Home / Uncategorized / ترکی میں شامی پناہ گزین بچوں کے ساتھ زیادتی،ملزم کو 108سال قید
ترکی میں شامی پناہ گزین بچوں کے ساتھ زیادتی،ملزم کو 108سال قید

ترکی میں شامی پناہ گزین بچوں کے ساتھ زیادتی،ملزم کو 108سال قید

انقرہ(مانیٹرنگ ڈیسک )ترکی میں جنگ وجدل سے ستائے شامی مہاجرین کے بچوں کے ساتھ ایسی شرمناک حرکات کی گئی ہیں کہ جنہیں جان کر انسانیت بھی شرما جائے۔
تفصیلات کے مطابق ترکی میں شامی مہاجرین کے کیمپ میں صحت کے شعبہ میں کام کرنے والے ایک شخص نے مہاجرین کے 8بچوں کو جنسی تشدد کا نشانہ بنا دیا جس کی والدین نے اعلیٰ حکام کو اطلا ع کردی۔پولیس نے مقامی طبی اہلکا ر کو گرفتار کر کے عدالت پیش کیا جہاںبچوںکو جنسی تشدد کا نشانہ بنانے والے کو 108سال قید کا حکم سنا دیا گیا۔
العربیہ کے مطابق مجرم نے پناہ گزین بچوں کی غربت اور ان کی دیگر مشکلات سے فائدہ اٹھاتے ہوئے ا±نہیں بلیک میل کرنے ساتھ ساتھ دو ڈالر سے کم رقم کے عوض جنسی عمل پر آمادہ کرنے کی مذموم کوشش کی ۔ترک نیوز ایجنسی کے مطابق ”دوگان“ کے مطابق یہ واقعہ شام اور ترکی کی سرحد پر قائم ”نسیب“پناہ گزین کیمپ میں پیش آیا۔
اس بات کا انکشاف اس وقت ہوا جب جنسی تشدد کا نشانہ بنائے جانے والے بچوں کے والدین نے حکام کو اس کی شکایت کی۔ مقامی میڈیا اور سماجی کارکنوں کا خیال ہے کہ سزا پانے والے درندہ صفت ترک شخص نے30 بچوں کو جنسی عمل کیلئے بلیک میل کیا مگران میں سے صرف آٹھ بچوں کے والدین نے شکایت درج کرائی جب کہ دوسرے لوگ با وجوہ خاموش ہیں۔
شامی پناہ گزینوں کی بہبود کے لیے سرگرم ایجنسی کا کہنا ہے کہ بچوں کو جنسی طور پر ہراساں کرنے میں ملوث شخص کو عبرت کا نشان بنانے کی کوششیں جاری ہیں تاکہ آئندہ کوئی شخص اس طرح کی درندگی کی جرات نہ کر سکے۔
خیال رہے کہ یہ پہلا موقع ہے جب ترکی میں کسی شخص کو بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی کے کیس میں پکڑا گیا ہے۔
خیال رہے کہ ترکی میں مقیم 27 لاکھ شامی پناہ گزینوں میںسے 2 لاکھ 50 ہزار افراد کیمپوں میں رہ رہے ہیں۔مذکورہ کیمپ میں مقیم شامی پناہ گزینوں کی تعداد 11 ہزار ہے۔

Comments are closed.

Scroll To Top