Home / Uncategorized / حکومت کی طرف سے مفت زمین اور سہولیات ملنے پر ممباسا میں پاکسانیوں نے 300 فیکٹریاں لگالیں
حکومت کی طرف سے مفت زمین اور سہولیات ملنے پر ممباسا میں پاکسانیوں نے 300 فیکٹریاں لگالیں

حکومت کی طرف سے مفت زمین اور سہولیات ملنے پر ممباسا میں پاکسانیوں نے 300 فیکٹریاں لگالیں

اسلام آباد (ویب ڈیسک) شیخ رشید نے قومی اسمبلی میں انکشاف کیا ہے کہ پاکستانی سرمایہ کاروں نے کینیا کے ساحلی علاقے ممباسا میں300 فیکٹریاں لگائیں اور وافر سرمایہ اس غیر معروف ملک میں لگایا، صرف اس لئے کہ وہاں حکومت نے انہیں مفت زمین اور سہولتیں دیں۔ اس کے برعکس پاکستان میں سرمایہ کار جس عذاب سے گزرتے ہیں، اس کو دیکھتے ہوئے پاکستان میں کاروبار لوگ سرمایہ کاری سے گریزاں ہیں؟

روزنامہ امت کے مطابق قومی اسمبلی میں بجٹ پر عام بحث کے دوسرے دن حزب اختلاف کے 2ارکان کی تقریروں کے بعد اصولاً حکمران جماعت کے کسی رکن کو بولنے کا موقع ملنا چاہیے تھا، تاہم سپیکر ایاز صادق نے شیخ رشید کے سارے گلے شکوے یہ کہہ کر دور کردئیے کہ وہ حکومتی رکن کے بجائے شیخ رشید کو موقع دیتے ہیں۔ شیخ رشید احمد نے اپنے سفر ممباسا کا ذکر کیا اور مختصر کہانی سنا کر حیران کردیا۔ ایک اور حیرت انگیز انکشاف شیخ رشید نے یہ کیا کہ راولپنڈی کے شریف خاندانوں کے بچے اپنی گزراوقات کیلئے چوری چکاری کرنے پر مجبور ہیں۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ میں گزشتہ رمضان ممباسا گیا، وہاں پاکستانی صنعت کاروں نے میرے اعزاز میں افطار پارٹی دی ۔ اس سرمایہ کاری کا سبب ان کے میزبانوں نے یہ بتایا کہ ممباسا کی حکومت نے انہیں زمین دی اور دفاتر کے چکر لگانے کی زحمت سے بچایا۔ صنعتی پیداوار کا تمام تر فائدہ ممباسا کے عوام اور پاکستانی سرمایہ داروں کے حصے میں آیا۔ ہمارے ہاں سرمایہ کار جس عذاب سے گزرتے ہیں، اس کو دیکھتے ہوئے پاکستان میں کوئی کیوں سرمایہ کاری کرے گا۔

Comments are closed.

Scroll To Top