Home / Uncategorized / دنیا کا وہ سیکولر ملک جہاں شریعت نافذ کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا، حکومت نے اعلان کردیا
دنیا کا وہ سیکولر ملک جہاں شریعت نافذ کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا، حکومت نے اعلان کردیا

دنیا کا وہ سیکولر ملک جہاں شریعت نافذ کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا، حکومت نے اعلان کردیا

کوالالمپور (مانیٹرنگ ڈیسک) ملائیشیا کا شمار اسلامی دنیا کے جدید ترین ممالک میں ہوتا ہے، اور اس کے بڑے شہر تو بالکل مغربی دنیا کا نظارہ پیش کرتے ہیں۔ شاید یہی وجہ ہے کہ جب اس ملک میں شریعت کے نفاذ کا اعلان سامنے آیا تو نہ صرف مغرب میں تشویش کا اظہار شروع ہو گیا بلکہ ملک کے اندر بھی اس فیصلے کی شدید مخالفت شروع ہو گئی ہے۔
اخبار دی انڈیپینڈنٹ کے مطابق شرعی قوانین کے نفاذ کے لئے نیا بل وزیراعظم نجیب رزاق کی مخلوط حکومت کی طرف سے پیش کر دیا گیا ہے۔ ابتدائی طور پر یہ بل اسلامی پارٹی ملائیشیاءکی طرف سے تجویز کیا گیا تھا۔ ملک میں عنقریب دو اہم ضمنی انتخابات بھی ہونے والے ہیں اور ناقدین کا کہنا ہے کہ وزیراعظم نجیب رزاق اسلامی سزاﺅں کے قانون کو محض ووٹرز کو متاثر کرنے اور خود پر جاری تنقید سے توجہ ہٹانے کے لئے استعمال کررہے ہیں۔
حزب مخالف کی کئی جماعتیں سر قلم کرنے اور ہاتھ کاٹنے جیسی سزاﺅں کے نفاذ کی اجازت دینے پر کسی طور تیار نظر نہیں آتیں۔ مخلوط حکومت میں شامل ملائیشین چائنیز ایسوسی ایشن پارٹی نے بل کو غیر آئینی قرار دے دیا ہے۔ اس پارٹی کا مﺅقف ہے کہ حدود قوانین ملائیشیا کے وفاقی آئین کی روح کے خلاف ہیں اور ملک میں بسنے والے مختلف طبقات کے درمیان کشیدگی کا باعث بنیں گے۔
واضح رہے کہ وزیراعظم نجیب رزاق پر 68 کروڑ ڈالر (68ارب پاکستانی روپے) کی کرپشن کے الزامات ہیں، تا ہم انہوں نے اپنی صفائی پیش کرنے کی بجائے شرعی قوانین کا بل متعارف کروا دیا ہے، اور یہی وجہ ہے کہ لوگ ان کی نیت پر شک کر رہے ہیں۔

Comments are closed.

Scroll To Top