Home / Uncategorized / دن دہاڑے پولیس پر بڑا حملہ ،پولیو ورکرز کی حفاظت پر مامور 7اہلکار شہید
دن دہاڑے پولیس پر بڑا حملہ ،پولیو ورکرز کی حفاظت پر مامور 7اہلکار شہید

دن دہاڑے پولیس پر بڑا حملہ ،پولیو ورکرز کی حفاظت پر مامور 7اہلکار شہید

13023458_1684258475162182_625486290_n

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)چند منٹ میں پولیس پر دو خونریز حملوں میں سات پولیس اہلکار شہید ہوگئے۔ڈی آئی جی ویسٹ فیروز شاہ کے مطابق موٹرسائیکل سوار دہشت گردوں نے پہلے پولیس موبائل وین پر حملہ کر کے4اہلکاروں کو شہید کیا ۔اور دوسرے واقعے میں ڈیوٹی پر موجود دیگر تین اہلکاروں کو شہید کیا ۔دونوں واقعات میں600گز کی دوری تھی۔انہوں نے بتایا کہ واقعہ میں پولیو ورکرز محفوظ رہے۔ڈی آئی جی کے مطابق دہشتگرد وں نے پولیو ورکرز سے بات کرنے کی کوشش کی جس سے پولیس اہلکاروں نے منع کردیا جس کے بعد انہوں نے فائرنگ کردی۔حملہ آوروں نے بڑے اور چھوٹے مختلف ہتھیاروں سے پولیس کے جوانوں کو نشانہ بنایا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق کافی منصوبہ بندی کے ساتھ یہ کارروائی کی گئی ۔واقعہ پاکستان بازار تھانہ کی حدودمیں پیش آیا۔جس کے اہلکاروں کو نشانہ بنایا گیا۔نجی ٹی وی کے مطابق اورنگی ٹاﺅن کا یہ علاقہ گنجان آبادہے اور پر رونق بازار میں پولیس کو ٹارگٹ کیا گیا۔خیال رہے کہاس سے پہلے بھی اورنگی ٹاﺅن ہی میں پولیس اہلکاروں کو پولیو مہم کے دوران فائرنگ کا نشانہ بنایا گیا۔ایس ایس پی ویسٹ کا کہنا ہے کہ مزید تفصیلات تحقیقات کے بعد سامنے آئیں گی۔واقعہ کے بعد رینجرز اور پولیس کی بھاری نفری موقع پر پہنچ گئی اور علاقہ کو گھیرے میں لے لیا جبکہ زخمیوں اور میتوں کو عباسی شہید ہسپتال منتقل کردیا گیاہے۔شہید اہلکاروں کی شناخت رستم خان،محمد اسماعیل ،غلام رسول ،وزیر اوردائم الدین ، ڈینیئل اور غازی کے نام سے ہوئی ہے۔دوسری جانب وزیر داخلہ سندھ سہیل انور کہتے ہیں شہید اہلکار ریپڈ رسپانس فورس میں تعینات تھے۔واقعہ کو سکیورٹی لیپس نہیں کہہ سکتے۔انہوں نے آئی جی سندھ کو فون کر کے ملزموں کی فوری گرفتاری کا حکم دیا۔دریں اثنا اعلیٰ حکام متعلقہ افسروں پر برس پڑے کہ ڈیوٹی پر مامور اہلکاروں کو بلٹ پوف جیکٹس کیوں نہیں دی گئیں۔علاوہ ازیں ڈی جی رینجرز میجر جنرل بلا ل اکبر اور آئی جی سندھ جائے وقوعہ پر پہنچے جہاں انہیں حملے کی تفصیلات اور حملہ آوروں کیخلاف کی جانے والی منصوبہ بندی سے آگاہ کیا گیا۔

 

Comments are closed.

Scroll To Top