Home / Uncategorized / سعودی عرب میں مقیم غیر ملکیوں پر اب تک کی سب سے خوفناک پابندی لگادی گئی، جان کر ہر پاکستانی کو غصہ آجائے
سعودی عرب میں مقیم غیر ملکیوں پر اب تک کی سب سے خوفناک پابندی لگادی گئی، جان کر ہر پاکستانی کو غصہ آجائے

سعودی عرب میں مقیم غیر ملکیوں پر اب تک کی سب سے خوفناک پابندی لگادی گئی، جان کر ہر پاکستانی کو غصہ آجائے

13084241_1687994518121911_666158449_n (1)

جدہ(مانیٹرنگ ڈیسک) زیادہ سے زیادہ سعودی شہریوں کو نوکریاں دینے کی سعودی حکام کی مہم اب اس نہج کو پہنچ چکی ہے کہ جدہ کی مرکزی سبزی منڈی بھی غیرملکیوں کے لیے ”نوگوایریا“ بنا دی گئی ہے اور میونسپل حکام نے تارکین وطن کے اس سبزی منڈی میں خریداری کرنے پر بھی پابندی عائد کر دی ہے۔ عرب نیوز کی رپورٹ کے مطابق میونسپل حکام نے مارکیٹ کے تاجروں کو پابند کر دیا ہے کہ وہ تارکین وطن کو سبزی اور پھل فروخت نہ کریں۔ میونسپل حکام کا کہنا ہے کہ ”اس اقدام سے مارکیٹ میں سعودی باشندوں کو نوکریاں دلوانے میں مدد ملے گی۔“ رپورٹ کے مطابق مذبحہ خانوں اور پبلک مارکیٹس کے محکمے کے ڈائریکٹر نصیر الجراللہ نے تاجروں سے کہا ہے کہ ”اگر تم اپنی سبزیاں اور پھل فروخت کرنے کے لیے غیرملکیوں کا انتظار کر رہے ہو تو یہ ذہن میں رکھو کہ ہم نہیں چاہتے کہ تم اپنا سامان انہیں فروخت کرو۔“

نصیر الجراللہ کے اس بیان پر تاجروں کی طرف سے شدید ردعمل سامنے آیا ہے۔ تاجروں کا کہنا ہے کہ”ملک میں کوئی ایسا قانون نہیں ہے جس کے تحت غیرملکیوں کو کسی مارکیٹ میں خریداری سے روکا جا سکے۔جو غیرملکی قانونی طور پر ملک میں مقیم ہیں وہ کہیں سے بھی خریداری کر سکتے ہیں۔“ واضح رہے کہ میونسپل حکام اس سے قبل مارکیٹ پر کئی چھاپے مار چکے ہیں اور وہاں قانونی طور پر کام کرنے والے تارکین وطن کو بھی گرفتار کیا جا چکا ہے۔ ان گرفتاریوں کے بعد نصیرالجراللہ کی طرف ایسا بیان سامنے آنے پر تاجروں اور میونسپل حکام میں ٹھن گئی ہے۔
مارکیٹ ذرائع کے حوالے سے عرب نیوز کا کہنا ہے کہ ”حکام کے چھاپوں کے بعد غیرملکیوں نے جدہ کی مرکزی مارکیٹ میں جانا بند کر دیا ہے جس سے وہاں افرادی قوت کا بحران پیدا ہو گیا ہے جس سے تاجروں کو شدید مالی نقصان اٹھانا پڑ رہا ہے۔ ایک اندازے کے مطابق اگر حکام کا یہی رویہ رہا تو یہ نقصان 40لاکھ ریال (تقریباً11کروڑ17لاکھ 55ہزار روپے) روزانہ سے تجاوز کر جائے گا۔تاجروں کا کہنا ہے کہ ”ہم وزارت محنت کے متعین کردہ کوٹے کے مطابق سعودی شہریوں کو نوکریاں فراہم کر رہے ہیں۔ مگر ہم 100فیصد سعودی شہریوں کو ملازمت نہیں دے سکتے۔“ تاجروں نے میونسپل حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ ایسے سعودی شہریوں کے نام بتائیں جو سبزی منڈی میں سٹالز پر کام کرنے کے خواہش مند ہوں۔

 

Comments are closed.

Scroll To Top