Home / Uncategorized / سندھ ہائیکورٹ کا 18 سال بعد طلاق کیس کا فیصلہ،شوہر کو ہرجانے کی رقم سود سمیت ادا کرنے کا حکم
سندھ ہائیکورٹ کا 18 سال بعد طلاق کیس کا فیصلہ،شوہر کو ہرجانے کی رقم سود سمیت ادا کرنے کا حکم

سندھ ہائیکورٹ کا 18 سال بعد طلاق کیس کا فیصلہ،شوہر کو ہرجانے کی رقم سود سمیت ادا کرنے کا حکم

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) سندھ ہائیکورٹ نے 18 سال بعد طلاق کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے شوہر کو ہرجانے کی رقم سود سمیت اداکرنے کا حکم دے دیا ہے۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق 1998 میں امین نامی شخص نے بیوی عابدہ کو نفسیاتی مریضہ ہونے کا الزام لگا کر طلاق دی تھی جس پر خاتون نے سندھ ہائی کورٹ سے رجوع کیا تھا۔1998 میں ہائی کورٹ کے سنگل بینچ نے امین کو بیوی کو 15 لاکھ روپے کے ہرجانے کی ادائیگی کا حکم دیا تھا ۔
سنگل بینچ کا فیصلہ آنے پر خاتون کے سابق شوہرامین نے سندھ ہائیکورٹ کے ڈبل بینچ سے رجوع کیا تھا ۔ خاتون عابدہ نے عدالت کے روبرو موقف اپنایا کہ اس کے سابق شوہرمحمد امین نے نفسیاتی مریض ہونے کا جھوٹا الزام لگا کر طلاق دی ۔ سندھ ہائیکورٹ کے ڈبل بینچ نے 18 سا ل بعد طلاق کا کیس نمٹاتے ہوئے محمد امین کی جانب سے پیش کیے گئے میڈیکل سرٹیفکیٹس کو جعلی قرار دیتے ہوئے اصل رقم سود سمیت ادا کرنے کا حکم سنا دیا ۔

Comments are closed.

Scroll To Top