Home / Uncategorized / شورش زدہ ملکوں میں سینکڑوں پاکستانی جنگجوؤں کے لڑنے کا اانکشاف
شورش زدہ ملکوں میں سینکڑوں پاکستانی جنگجوؤں کے لڑنے کا اانکشاف

شورش زدہ ملکوں میں سینکڑوں پاکستانی جنگجوؤں کے لڑنے کا اانکشاف

اسلا آباد( اے این این ) پاکستان کے تقریباً 650شہریوں کے شام، عراق، یمن، افغانستان اور وسطی ایشیائی ممالک کے شورش زدہ علاقوں میں مختلف تنظیموں کیساتھ مل کر لڑ نے کاانکشاف ہواہے،خفیہ اداروں نے اب تک ان میں سے 132 کی شناخت کرلی ہے اور خدشہ ظاہر کیا ہے کہ ان ممالک میں بین الاقوامی فورسز کے ہاتھوں شکست کے بعد جب یہ واپس آئیں گے تو پاکستان میں فرقہ وارانہ اختلافات میں اضافہ ہوسکتا ہے۔میڈیارپورٹ کے مطابق وفاقی حکومت کے نیشنل کرائسس مینجمنٹ سیل (این سی ایم سی)نے قانون نافذ کرنے والے اداروں کو مطلع کردیا ہے اور انہیں ملکی سرحدوں خاص طور پر بلوچستان، خیبر پختونخوا، ساحلی علاقوں اور ایئرپورٹس پر سیکورٹی سخت کرنے کی ہدایت کی ہے۔رپورٹ کے مطابق ایک سینئر سیکورٹی افسر نے بتایا کہ مشرق وسطی، افغانستان اور وسطی ایشیائی ممالک میں جنگجوؤں کو ہونے والی شکست نے پاکستان کو فرقہ وارانہ تشدد کی نہج پر پہنچادیا اور این سی ایم سی کو وزارت داخلہ کو یہ سفارش کرنی پڑی ہے کہ وہ ان جنگجوؤں کی وطن واپسی کو روکنے کیلئے اقدامات کرے۔ انہوں نے بتایا کہ این سی ایم سی نے انٹیلی جنس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کو ہدایات کی ہیں کہ وہ شورش زدہ علاقوں میں بر سرپیکار جنگجوؤں کے گھر والوں کی بھی نگرانی کریں جو وطن واپس آکر پاکستان کیلئے متعدد سیکورٹی خطرات پیدا کرسکتے ہیں۔ سیکورٹی افسرکے مطابق خفیہ اداروں کو قانون نافذ کرنے والے اداروں کے ساتھ مل کر جنگجوؤں کے اہل خانہ کی موثر نگرانی کرنی ہوگی۔رپورٹ کے مطابق قانون نافذ کرنے والے ادارے کے ایک ذریعے نے بتایا کہ افغانستان، مشرق وسطی اور وسطی ایشیائی ممالک میں شکست کا سامنا کرنے والے غیر ملکی جنگجو بھی پاکستان میں پناہ لے سکتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ غیر ملکی جنگجو خاص طور پر وہ جو وسطی ایشیائی ممالک سے تعلق رکھتے ہیں افغانستان کو محفوظ پناہ گاہ سمجھ سکتے ہیں لیکن شام اور عراق میں شدت پسند تنظیموں کے ساتھ مل کر لڑنے والے پاکستانی شہری وطن واپسی کو ہی ترجیح دیں گے۔

Comments are closed.

Scroll To Top