Home / Uncategorized / طورخم بارڈر پر فائرنگ کے وقت افغان فوج کیساتھ را ،موساد کے اہلکاربھی موجود تھے: رپورٹ
طورخم بارڈر پر فائرنگ کے وقت افغان فوج کیساتھ را ،موساد کے اہلکاربھی موجود تھے: رپورٹ

طورخم بارڈر پر فائرنگ کے وقت افغان فوج کیساتھ را ،موساد کے اہلکاربھی موجود تھے: رپورٹ

لاہور (ویب ڈیسک ) افغانستان کی طرف سے جب پاکستانی سرحد طورخم بارڈر پر فائرنگ کا سلسلہ شروع کیا گیا تو اس وقت افغان فوج کے ساتھ بھارتی خفیہ ایجنسی را ، اسرائیل کی ایجنسی موسادا ور2 اور غیر ملکی ایجنسیز کے اہلکار موجود تھے اور وہ اس سارے واقعہ کو مانیٹر کر کے آ گے بھی اطلاع دیتے رہے۔

روزنامہ دنیا کے مطابق جب پاک فوج افغانستان کے کچھ مورچوں کے قریب گئی تو وہاں پر را اور موساد سے تعلق رکھنے والے خفیہ اداروں کے حوالے سے ثبوت ملے جن میں دو موبائل فون ، وائر لیس سیٹ اور کچھ اہم چیزیں بھی ملیں، وہ انہی وائرلیس کے ذریعے پیغام رسانی کررہے تھے۔ اخبار کا کہنا ہے بھارتی فوجی خفیہ طور پر  اپنے مشن کی کامیابی کیلئے باقاعدہ افغانستان کی فوج میں ڈیوٹی دے رہے ہیں ،وہ بھی انہی چیک پوسٹوں پر موجود تھے اور پاکستان کی طرف سے سخت جواب کے بعد وہاں سے بھاگ نکلے۔

رپورٹ میں یہ بھی کہاگیاہے کہ پاکستان کی طرف سے جوابی وار پر جو افغان فوجی ہلاک ہوئے، ان میں بھارتی فوج کے  اہلکار بھی شامل تھے اور اسی وجہ سے افغانستان کی طرف سے اپنے زخمیوں اور ہلاک ہونے والے فوجیوں کو سامنے نہیں لایا جا رہا۔

Comments are closed.

Scroll To Top