Home / Uncategorized / غیر ملکیوں پر ظالمانہ پابندی مہنگی پڑی، سعودی عرب کو بڑا جھٹکا لگ گیا
غیر ملکیوں پر ظالمانہ پابندی مہنگی پڑی، سعودی عرب کو بڑا جھٹکا لگ گیا

غیر ملکیوں پر ظالمانہ پابندی مہنگی پڑی، سعودی عرب کو بڑا جھٹکا لگ گیا

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی جنرل ڈائریکٹوریٹ آف ٹریفک کی طرف سے رواں ماہ کے آغاز میں فیصلہ کیا گیا کہ پانچ سے کم افراد پر مشتمل غیر ملکی خاندان سات یا اس سے زائد سیٹوں والی گاڑی نہیں رکھ سکتے۔ یہ فیصلہ جہاں غیر ملکیوں کے لئے پریشانی کا باعث بنا وہیں مملکت میں کام کرنے والے کار ڈیلروں اور شو روم مالکان کے کاروبار کے لئے بھی بڑا دھچکا ثابت ہوا۔
سعودی گزٹ کے مطابق اس فیصلے سے متاثر ہونے والے غیر ملکیوں، شو روم مالکان اور کار ڈیلروں کی طرف سے جدہ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کو درخواستیں موصول ہورہی ہیں، جن میں کہا جارہا ہے کہ اس فیصلے کے منفی اثرات کے پیش نظر اس پر نظر ثانی کی جائے۔ کار شوروم مالکان کا کہنا ہے کہ اس فیصلے کے بعد کاروں کی فروخت میں بھاری کمی واقع ہوچکی ہے۔ ایک شوروم کے مالک نے بتایا کہ جہاں پہلے 20 کاریں ایک ماہ میں فروخت ہوا کرتی تھیں وہاں اب صرف دو کاریں فروخت ہورہی ہیں۔

سعودی حکومت نے کفیلوں کیلئے ایک ایسے کام پر انعام کا اعلان کر دیا کہ جان کر ملک میں مقیم غیر ملکی شدید پریشان ہو جائیں
کونسل آف سعودی چیمبرز میں نیشنل کمیٹی آف وہیکل ایجنٹس کے صدر عثمان ابو شوشسا کا کہنا تھا کہ بہت سے غیر ملکیوں نے یہ گاڑیاں قسطوں پر خریدی ہیں اور ان کی طرف سے ابھی واجبات کی ادائیگی کا عمل مکمل نہیں ہوا تھا کہ یہ فیصلہ آگیا۔ ان کا کہنا تھا کہ اس فیصلے کو ان غیر ملکیوں کے حوالے سے بھی دیکھنا چاہیے کہ جو بڑی گاڑیوں کو مسافروں کی نقل وحمل کے لئے استعمال نہیں کرنا چاہتے۔
واضح رہے کہ ٹرانسپورٹ حکام کا موقف تھا کہ غیر ملکیوں کے لئے سات یا زائد سیٹوں والی گاڑیوں کی خریداری پر پابندی کا مقصد پرائیویٹ گاڑیوں کے کمرشل استعمال کا سدباب کرنا تھا۔ حکام کا کہنا ہے کہ پرائیویٹ گاڑیوں کو طالبعلموں اور اساتذہ کو سکولوں اور کالجوں میں لانے لیجانے کے لئے بھی استعمال کیا جارہا ہے۔

Comments are closed.

Scroll To Top