Home / Uncategorized / مقبوضہ کشمیر، مسلمان جوڑا جان کی پروا کئے بغیر کرفیو میں ہندو دوستوں کیلئے کھانا لے کر پہنچ گیا
مقبوضہ کشمیر، مسلمان جوڑا جان کی پروا کئے بغیر کرفیو میں ہندو دوستوں کیلئے کھانا لے کر پہنچ گیا

مقبوضہ کشمیر، مسلمان جوڑا جان کی پروا کئے بغیر کرفیو میں ہندو دوستوں کیلئے کھانا لے کر پہنچ گیا

سرینگر(نیوز ڈیسک) مقبوضہ کشمیر میں جہاں ایک طرف بھارتی فوج اپنی بربریت کے نئے ریکارڈ بنا رہی ہے وہیں مسلمان اپنی مہمان نوازی اور مذہبی ذمہ داریاں پورا کرکے بھارتی سامراج کے منہ پر طمانچہ مار رہے ہیں۔ ایسی ہی ایک مثال اس وقت دیکھنے کو ملی جب ایک مسلمان جوڑا جان کی پروا کئے بغیرکرفیو زدہ علاقے میں اپنے ہندو دوستوں کیلئے کھانا لے کر گھر سے باہر آگیا۔بھارتی میڈیا کے مطابق جب زبیدہ بیگم اور ان کے شوہر کو یہ اطلاع ملی کہ کرفیو کی وجہ سے ان کے ہندو دوست بھوکے ہیں تو وہ کھانے کے بیگ لے کر کئی میل پیدل چل کران کی مدد کرنے پہنچ گئے۔ اس جوڑے کو ان کے دوستوں نے فون کال کی تھی کہ وہ بھوکے ہیں ۔

انڈیا ٹوڈے سے گفتگو کرتے ہوئے زبیدہ بیگم نے کہا کہ مجھے میری دوست نے کال کی کہ ہمارے پاس کھانے کیلئے کچھ نہیں۔ہمارے ساتھ ہماری دادی بھی ہیں جو شدید پریشان ہیں پلیز ہمارے لئے کھانے کا انتظام کرو۔اس کال کے بعد میں نے اور میرے کاوند نے فیصلہ کیا کہ کچھ بھی ہو ہم یہ کھانا ان تک پہنچائیں گے۔وہ کھانا لے کر دیوان چند پنڈت کے گھر پہنچ گئے۔ واضح رہے کہ حریت رہنما برہان وانی کہ شہادت کے بعد وادی میں شدید ہنگامے پھوٹ پڑے ہیں ۔ آدھی وادی میں کرفیو لگا دیا گیا ہے جس سے ان علاقوں میں رہنے والے لوگوں کی زندگیاں اجیرن ہو چکی ہیں اور وہاں غذائی قلت پیدا ہو چکی ہے۔زبیدہ بیگم بھی اس علاقے میں رہتی ہیں جہاں کرفیو نہیں لگا ۔

 

Comments are closed.

Scroll To Top