Home / Uncategorized / پاکستان اور ایران برادر ملک ہیں ،سعودی عرب اور ایران کے درمیان ثالثی کے کردار کی تجویز آرمی چیف نے دی :چوہدری نثار
پاکستان اور ایران برادر ملک ہیں ،سعودی عرب اور ایران کے درمیان ثالثی کے کردار کی تجویز آرمی چیف نے دی :چوہدری نثار

پاکستان اور ایران برادر ملک ہیں ،سعودی عرب اور ایران کے درمیان ثالثی کے کردار کی تجویز آرمی چیف نے دی :چوہدری نثار

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک )وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار نے کہاہے کہ ایران پاکستان کا برادر ملک ہے،ایران نے ہر مشکل وقت میں پاکستان کا ساتھ دیاہے،ایران پاکستان کیخلاف کسی قسم کی بھی منفی سرگرمیوں میں ملوث نہیں ہے،پرویز مشرف کا نام ا ی سی ایل میں سپریم کورٹ کے فیصلے کے مطابق ڈالا گیا ۔
پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے چوہدری نثار کا کہناتھا کہ گزشتہ روز ایرانی سفیر سے ملاقات ہوئی جس میں انہوں نے مخصوص میڈیا پر چلنے والی تضحیک آمیز خبروں پر تشویش کا اظہار کیا ،جس سے یہ تاثر جاتاہے کہ پاکستا ن اور ایران برادر ملک نہیں ہے جبکہ دراصل پاکستان اور ایران بہترین دوست ہیں۔چوہدری نثار نے میڈیا نمائندوں سے درخواست کی ایسا تاثرہر گز نہ دیا جائے کہ پاکستان اور ایران برادر ملک نہیں ہیں ۔ان کا کہناتھا کہ ایرانی صدر نے اپنے دورہ پاکستان میں کہا کہ پاکستان کی سیکیورٹی ایران کی سیکیورٹی ہے ۔انہوں نے کہا کہ بھارتی جاسوس کے معاملے کو ایران کے ساتھ نہ جوڑا جائے ،بھارتی جاسوس کے معاملے کو منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا ۔چوہدری نثار کاکہناتھا کہ سعودی عرب اور ایران کے درمیان معاملات کو ٹھیک کرنے کیلئے پاکستان کو ثالث کا کردار ادا کرنے کی تجویز آرمی چیف نے دی تھی ۔انہوں نے کہا کہ کچھ طاقتیں چاہتی ہیں کہ پاکستان اور ایران کے تعلقات خراب ہوں ۔
وفاقی وزیر داخلہ کا کہناتھا کہ وزیر داخلہ اور وزیراعلیٰ کو آرمی چیف سے خفیہ ملاقات کرنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے ،پرائم منسٹر ہاﺅس کا ہیلی کاپٹر ہمیں ملاقات کیلئے لے کر گیا اور ہم دوپہر تین بجے گئے تھے رات کو نہیں گئے تھے جس پر اس ملاقات کو خفیہ کہا جارہاہے ۔انہوں نے کہا کہ وہ رات ہونے سے قبل پانچ بجے ہی واپس آ گئے ہیں ،اس طرح کی ملاقاتیں ہوتی رہتی ہیں اور یہ روٹین کی ملاقاتیں ہیں ۔ا ن کا کہناتھا کہ مارچ 2013میں سپریم کورٹ کے فیصلے کے مطابق پرویزمشرف کا نام ای سی ایل میں ڈالا گیا ہے ،کچھ لوگ کہتے ہیں کہ حکومت اس معاملے پر سنجیدہ نہیں ہے ہمارے سے پہلے پانچ سال حکومت رہی ہے ،یہ صرف غداری کا کیس نہیں ہے بلکہ ان کی لیڈر کے قتل کا بھی کیس ہے ،یہ سارے اس وقت کیوں خاموش تھے ،یہ پانچ سال سوتے رہے ہیں اور آج یہ تجزیہ کار سارا الزام ہماری حکومت پر ڈال رہے ہیں،جوکوئی فیصلہ کرے اس میں یہ طاقت ہونی چاہیے کہ اسے قبول کرے ۔انہوں نے کہا کہ ہم نے پبلک پراسیکیوٹر مقرر کیا ،سپیشل کورٹ بنوائی اور پانچ ماہ میں پراسیکیوشن مکمل کروائی ،چوہدری نثار نے کہا کہ اور کسے کہتے ہیں سنجیدگی ۔ان کا کہناتھا کہ کیس میں دیگر ملزمان کے نام شامل کرنا حکومت کا نہیں بلکہ سپیشل کورٹ کا فیصلہ تھا ،عدالتی مراحل میں تاخیر ہوئی تو ہماری غلطی نہیں ہے ۔حکومت نے پرویز مشرف کی بیرون ملک جانے کی تین درخواستیں مسترد کیں ۔اس موقع پر چوہدری نثار نے پرویز مشرف سے متعلق عدالتی فیصلے پڑھ کر بھی سنائے ۔
 چوہدری نثار کا کہناتھا کہ ایرانی صدر کا دورہ پاکستان انتہائی مفید رہاہے ،پاکستان اور ایران برادر ملک ہیں ،ایرانی سفیر نے گزشتہ ملاقات میں مخصوص میڈیا پر چلنے والی خبروں پر تشویش کا اظہار کیا اور بتایا کہ ایران کے حوالے سے کچھ کارٹونز شائع کیے گئے ۔چوہدری نثا ر نے کہا کہ میں نے ایرانی سفیر کو بتایا کہ ہمارا میڈیا آزاد ہے اور یہ ہمیں بھی نہیں چھوڑتا بلکہ اس سے بڑھ کر ہمارے کارٹونز بناتاہے لیکن صرف ملٹری کو نہیں چھیڑتا اور کیوں نہیں چھیڑتا یہ میں نے ایرانی سفیر کو بتایا ۔چوہدری نثار کا کہناتھا کہ انہوں نے گزشتہ روز آرمی چیف سے بھی ملاقات میں یہی بات کہ لیکن آرمی چیف نے کہا کہ ہمارا میڈیا ہم پر بھی تنقید کرتاہے جس میں نے کہا کہ اس طرح نہیں کرتا جس طرح حکومت پر کرتاہے ۔

 

Comments are closed.

Scroll To Top