Home / Uncategorized / پنجاب حکومت کاعمران خان پر پاکستان میں “آف شور رشتے داروں “کے نام پر پلاٹ حاصل کرنے کا الزام
پنجاب حکومت کاعمران خان پر پاکستان میں “آف شور رشتے داروں “کے نام پر پلاٹ حاصل کرنے کا الزام

پنجاب حکومت کاعمران خان پر پاکستان میں “آف شور رشتے داروں “کے نام پر پلاٹ حاصل کرنے کا الزام

13249509_1693378024250227_707066062_n

لاہور(نامہ نگار خصوصی)پاناما لیکس کے بعد پاکستان مسلم لیگ (ن) اور پاکستان تحریک انصاف کے راہنماﺅں کی ایک دوسرے کے خلاف تنقیدی بیان بازی کی طرح سوشل میڈیا پر بھی دونوں جماعتوں کے حامیوں اور مخالفین کی جنگ تیز سے تیز تر ہوتی جارہی ہے ۔ان دنوں عمران خان کی طرف سے 1987ءمیں اس وقت کے وزیراعلیٰ پنجاب میاں نواز شریف کو پیش کی گئی درخواست کا عکس سوشل میڈیا پر گردش کررہا ہے ،ہاتھ سے لکھی گئی اس درخواست میں عمران خان نے وزیراعلیٰ پنجاب کو ڈیئر سر کہہ کر مخاطب کیا ہے اور تحریر کیا ہے کہ “میں آپ سے استدعا کرتا ہوں کہ مہربانی کرکے مجھے ایک رہائشی پلاٹ الاٹ کیا جائے ۔میرا کوئی گھر نہیں ہے اور میں اپنے استعمال کے لئے ایک گھر تعمیر کرنا چاہتا ہوں ،شکریہ ،آپ کا مخلص ،عمران خان “۔پاکستان مسلم لیگ (ن) کے متعدد راہنما اس خط کا اپنے بیانات میں پہلے بھی ذکر کرتے رہے ہیں ،اس سلسلے میں جب پنجاب حکومت کے ترجمان زعیم قادری سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ یہ خط عمران خان کا اپنا تحریرکردہ ہے جس کی انہوں نے کبھی تردید نہیں کی ۔زعیم قادری نے روزنامہ پاکستان کو بتایا کہ اس درخواست کی روشنی میں عمران خان کو جوہرٹاﺅن میں ایک رہائشی پلاٹ الاٹ کیا گیا تھا ،انہوں نے الزام لگایا کہ اس پلاٹ کے علاوہ بھی عمران خان نے اپنے اور اپنے قریبی احباب کے نام پر 7کے قریب پلاٹ حاصل کئے تھے ،ان میں سے 2 تو ان کے اپنے نام تھے جبکہ باقی لندن میں آف شور کمپنی کے ذریعے حاصل کئے گئے فلیٹ کی طرح “آف شور رشتے داروں “کے نام پرتھے۔

Comments are closed.

Scroll To Top