Home / Uncategorized / چینی فوج کی وہ صلاحیت جس سے متاثر ہوکر امریکی جنرل بھی بے اختیار تعریف کرنے پر مجبور ہوگیا

چینی فوج کی وہ صلاحیت جس سے متاثر ہوکر امریکی جنرل بھی بے اختیار تعریف کرنے پر مجبور ہوگیا

13101222_1687521794835850_200149903_n

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) بحیرہ جنوبی چین میں جاری کشیدگی عروج پر ہے۔ امریکا الزام لگا رہا ہے کہ چین اسسمندر میں جارحیت اور ناجائز قبضہ کر رہا ہے، لیکن دوسری جانب اس کے اپنے ہی اعلٰی ترین فوجی افسر نے چینیفوج سے شدید متاثر ہونے کے بعد تعریف کے پل باندھ دئیے ہیں۔
نیوز سائٹ بلومبرگ کے مطابق بحیرہ جنوبی چین میں موجود امریکی بحری بیڑے کے کمانڈر رئیر ایڈمرل مارکس ہچکاک کا کہنا تھا کہ وہ اپنے سب سے بڑے بحری حریف کے پیشہ ورانہ رویے کے معترف ہیں۔ امریکی طیارہ بردار جہاز یو ایس ایس جان سی سٹینس کے کمانڈر مارکس ہچکاک نے کہا کہ ان کے بحری جہاز تقریباً 24 گھنٹے اور ساتوں دن مکمل پروفیشنل پیپلز لبریشن آرمی کے ساتھ رابطے میں ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ چینی بحریہ کے ساتھ روابط پیشہ ورانہ تعلقات کی بہترین مثال ہیں۔
دونوں ممالک کے درمیان انتہائی کشیدہ صورتحال میں امریکی بحریہ کے اعلیٰ ترین افسر کی طرف سے چینی فوج کے لئے تعریف وتوصیف پر مبنی کلمات نے دنیا کو حیران کردیا ہے۔
امریکی طیارہ بردار جہاز بحیرہ جنوبی چین کے علاقے میں ملائیشیا کے ساحل سے تقریباً 125 ناٹیکل میل کے فاصلے پر موجود ہے۔ اس کے ساتھ تین ڈسٹرائر جنگی بحری جہاز، کروز میزائلوں سے لیس ایک جنگی بحری جہاز اور درجنوں جنگی ہوائی جہاز بھی موجود ہیں۔ امریکا نے چین کی طرف سے سمندر میں 7مصنوعی جزیروں کی تعمیر اور مبینہ طور پر ہتھیاروں کی تنصیب کے بعد اپنا بحری بیڑہ اس علاقے کی طرف روانہ کیا تھا۔

Comments are closed.

Scroll To Top