Home / Uncategorized / کراچی میں ہیٹ اسٹروک سے 2 افراد جاں بحق؛ درجہ حرارت 38 ڈگری تک پہنچ گیا
کراچی میں ہیٹ اسٹروک سے 2 افراد جاں بحق؛ درجہ حرارت 38 ڈگری تک پہنچ گیا

کراچی میں ہیٹ اسٹروک سے 2 افراد جاں بحق؛ درجہ حرارت 38 ڈگری تک پہنچ گیا

13023440_1684949145093115_1661547795_n

کراچی: محکمہ موسمیات نے خبردار کیا تھا کہ شہر قائد میں آج سے آئندہ 3 روز تک شدید گرمی پڑنے کا امکان ہے جب کہ آج شہر میں ہیٹ اسٹروک کے باعث 2 افراد جاں بحق ہوگئے۔

محکمہ موسمیات کے مطابق کراچی میں درجہ حرارت 38 ڈگری سینٹی گریڈ تک پہنچ گیا اورمزید 2 روز شدید گرمی کی لہر برقراررہنے کا امکان ہے۔ ایدھی ذرائع نے تصدیق کی ہے کہ آج شہر میں پڑنے والی گرمی کے باعث منگھو پیر کے رہائشی 34 سالہ شرافت اوراورنگی ٹاؤن سے تعلق رکھنے والے 50 سالہ محمد ستارجاں بحق ہوگئے۔

محکمہ موسمیات نے حال ہی میں ہیٹ ویو الرٹ جاری کرتے ہوئے خبردار کیا تھا کہ کراچی میں 24 اپریل تک شدید گرمی پڑنے کا امکان ہے اور درجہ حرارت 40 ڈگری سینٹی گریڈ تک بھی جا سکتا ہے۔ محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ سمندر سے چلنے والی ہوائیں بند ہونے کی صورت میں ہیٹ انڈیکس اس سے بڑھ بھی سکتا ہے لہذا شہری غیر ضروری طور پر گھروں سے باہر نہ نکلیں اوراگرنکلیں تو اپنے سر اور چہرے کو اچھی طرح ڈھانپ لیں اس کے علاوہ پانی اور دیگر مشروبات کا زیادہ سے زیادہ استعمال کریں۔

محکمہ موسمیات کی جانب سے الرٹ جاری کیے جانے کے بعد سندھ حکومت اور کے ایم سی کے زیر انتظام اسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی ہے، تمام طبی اور نیم طبی عملے کی چھٹیاں منسوخ جب کہ ہیٹ ویو کے متاثرہ افراد کی طبی امداد کے لیے بنائے گئے خصوصی وارڈز کو فعال کردیا گیا ہے۔

دوسری جانب چیف سیکریٹری نے گرمی سے جاں بحق ہونے والے شخص کی ہلاکت پر متعلقہ اداروں پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے رپورٹ طلب کر لی ۔ چیف سیکریٹری نے کہا کہ ہیٹ اسٹروک کے اجلاس کے فیصلوں پر عملدرآمد کیوں نہیں ہوا، بتایا جائے کہ  اہم شاہراہوں پر کتنی سبیلیں لگائی گئیں ہیں جب کہ انہوں نے ہدایات جاری کیں کہ اسپتالوں کو ہیٹ اسٹروک سے نمٹنے کے لیے الرٹ کیا جائے۔

واضح رہے کہ گزشتہ سال کراچی میں ہیٹ اسٹروک کے نتیجے میں 1200 سے زائد افراد جان کی بازی ہار گئے تھے۔

Comments are closed.

Scroll To Top