Home / Uncategorized / کیپٹن صفدر کیلئے انتہائی تشویشناک خبر آ گئی، بڑا خطرہ منڈلانے لگا
کیپٹن صفدر کیلئے انتہائی تشویشناک خبر آ گئی، بڑا خطرہ منڈلانے لگا

کیپٹن صفدر کیلئے انتہائی تشویشناک خبر آ گئی، بڑا خطرہ منڈلانے لگا

13115871_1692018554386174_40421676_n

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) معروف صحافی اور تجزیہ کار رﺅف کلاسرا نے کہا ہے کہ پانامہ لیکس میں مریم صفدر کی کمپنیز سامنے آنے کے بعد ان کے شوہر کیپٹن صفدر کو نااہل قرار دینے کی درخواست الیکشن کمیشن میں جمع کرا دی گئی ہے۔ نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے رﺅف کلاسرا نے کہا کہ 4اپریل کو پانامہ لیکس کا سکینڈل سامنے آیا جس میں مریم صفدر کی آف شور پراپرٹیز سامنے آئیں، اب قانون کے مطابق الیکشن کمیشن میں پڑے کیپٹن صفدر کے گوشوارے ڈکلیئر کرنا بہت ضروری تھا اوراس سکینڈل کے سامنے آنے کے ایک ماہ بعد بھی کسی نے بھی ان کے خلاف درخواست نہ دی کہ کیپٹن صفدر نے اپنے اثاثے چھپائے ہیں اس لئے انہیں نااہل قرار دیا جائے۔

انہوں نے بتایا کہ اب مانسہرہ میں قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 21 سے نوابزادہ صلاح الدین جو کیپٹن صفدر کے مخالف امیدوار تھے اور الیکشن ہار گئے تھے، نے سیکرٹری الیکشن کمیشن کو کیپٹن صفدر کے خلاف درخواست دید ی ہے اور اس معاملے کیلئے وکیل سے بھی رابطہ کرل یا ہے جن کا نام فیصل چوہدری ہے جو یوسف رضا گیلانی کے وکیل بھی رہ چکے ہیں اور بہت تجربہ کار اور عقلمند ہیں۔ فیصل چوہدری نے تصدیق کی ہے کہ کیپٹن صفدر کے خلاف اثاثے چھپانے کے الزام میں درخواست دی گئی ہے جس میں انہیں نااہل قرار دینے کی استدعا کی گئی ہے۔
رﺅف کلاسرا نے کہا کہ پہلی دفعہ ایسا ہو رہا ہے کہ کچھ دوسرے لوگوں کیلئے بھی مسائل کھڑے ہوں گے جیسا کہ سینیٹر طلحہ محمود کا نام بھی آف شور کمپنیز میں آیا ہے تاہم انہوں نے بھی اپنے اثاثوں میں ان کا کہیں ذکر نہیں کیا جس کے باعث ان کے خلاف بھی درخواست دی جا سکتی ہے کہ اثاثے چھپانے اور جھوٹ بولنے پر انہیں نااہل قرار دیا جائے۔
دوسری جانب کیپٹن صفدر کے خلاف درخواست اس لئے بھی اہم ہے کہ سپریم کورٹ نے حال ہی میں 2 فیصلے دیئے ہیں جن میں سے ایک جسٹس افتخار چیمہ کے حوالے سے تھا۔ ان پر الزام تھا انہوں نے ٹیکس گوشواروں میں اپنی اہلیہ کے بینک اکاﺅنٹ کا ذکر نہیں کیا اور اسی بناءپر سپریم کورٹ نے انہیں نااہل قرار دیا۔ دوسرا فیصلہ جنوبی پنجاب کی ایک خاتون کے حوالے سے ہے اور اس میں بھی گوشوارے چھپانے پر نااہلی کا حکم دیا گیا اور اب تیسرا بڑا کیس یہ ہے جو دراصل سپریم کورٹ کیلئے ایک بڑا چیلنج ہے۔

اب دیکھنا یہ ہے کہ کیا سپریم کورٹ اس کیس میں بھی ویسا ہی فیصلہ کرے گی جو جسٹس چیمہ اور جنوبی پنجاب کی خاتون کے خلاف کیسز میں کیا گیا۔ اس کے علاوہ الیکشن کمیشن کیلئے بھی یہ ایک بڑا امتحان ہے اور دیکھنا یہ ہے کہ کیا وہ اس کیس کو آگے بڑھائے گا یا پھر داخل دفتر کر دے گا۔

Comments are closed.

Scroll To Top