Home / Uncategorized / 24 ممالک کے 31 ہزار فوجی روس کے خلاف میدان میں اتر آئے، ایسی جگہ پہنچ گئے کہ دنیا کیلئے بڑا خطرہ پیدا ہوگیا
24 ممالک کے 31 ہزار فوجی روس کے خلاف میدان میں اتر آئے، ایسی جگہ پہنچ گئے کہ دنیا کیلئے بڑا خطرہ پیدا ہوگیا

24 ممالک کے 31 ہزار فوجی روس کے خلاف میدان میں اتر آئے، ایسی جگہ پہنچ گئے کہ دنیا کیلئے بڑا خطرہ پیدا ہوگیا

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) روس نے عالمی پانیوں میں حال ہی میں اپنی ایٹمی آبدوزوں کی تعداد میں خطرناک حد تک اضافہ کر دیا ہے، اس کے علاوہ بھی وہ اپنی جنگی صلاحیتوں کو اس انداز میں بڑھا رہا ہے جسے مغربی ممالک اپنے لیے خطرہ سمجھ رہے ہیں۔ اب نیٹو کے 24رکن ممالک نے روس کو جواب دینے کے لیے نیٹو افواج کی سرد جنگ کے بعد سب سے بڑی مشترکہ جنگی مشقیں شروع کر دی ہیں جس سے مغربی ممالک اور روس کے تعلقات مزید کشیدہ ہونے کا خطرہ بڑھ گیا ہے۔

برطانوی اخبار ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق ان مشقوں کا مقصد روس پر دباﺅ بڑھانا اور اسے یہ باور کرانا ہے کہ وہ ”باس“ نہیں ہے۔”ایناکونڈا“ کے نام سے شروع کی جانے والی ان مشقوں میں نیٹو افواج کے 31ہزارفوجی، سینکڑوں ٹینک اور جنگی طیارے اور3ہزار سے زائد فوجی گاڑیاں استعمال کی جائیں گی۔ مشقوں میں برطانیہ کے1ہزار، پولینڈ کے 12ہزار اور امریکہ کے 14ہزار فوجی شرکت کر رہے ہیں۔پولینڈ میں ہونے والی یہ مشقیں 2ہفتے تک جاری رہیں گی۔ ان مشقوں میں یوکرائن کی فوج بھی شامل ہے جو ماضی میں سوویت یونین کا حصہ تھا۔

پولینڈ کے دارالحکومت وارسا میں مشقوں کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پولش وزیردفاع انٹونی میسروکز کا کہنا تھا کہ ”ان جنگی مشقوں کے ذریعے ہم نیٹو افواج کی مل کر جنگ لڑنے کی صلاحیتوں کا اندازہ لگانا چاہتے ہیں۔“ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے امریکی فوج کے آرمی چیف آف سٹاف مارک ملے کا کہنا تھا کہ ”ان مشقوں میں امریکی افواج کی شرکت اس عزم کا اظہار ہے کہ ہم پولینڈ کے عوام کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں۔ یہ جنگی مشقیں کسی بھی لڑائی کے لیے ہماری اجتماعی تیاری کو بھی بہتر بنائیں گی۔“برطانوی اخبار کے مطابق روس نے پوری شدت سے نیٹو کے اس اقدام کی مخالفت کی ہے اورروسی صدر نے بھی اعلان کر دیاہے کہ وہ ملک کے مغربی اور جنوبی بارڈرز پر تین نئی ڈویژنز قائم کرے گا تاکہ اس کے ہمسایہ ممالک میں نیٹو کی بڑھتی موجودگی کی خطرے سے نمٹا جا سکے۔ واضح رہے کہ گزشتہ ماہ امریکہ اور روس نے ایک دوسرے پر شمالی یورپ میں فوجی غلبے کی کوششیں کرنے کے الزامات عائد کیے تھے کیونکہ گزشتہ ماہ امریکہ نے پولینڈ اور رومانیہ میں اپنی میزائل شیلڈز نصب کرنے کا اعلان کیا تھا۔

Comments are closed.

Scroll To Top