Home / Uncategorized / 9/11 حملوں کا وہ خوفناک نقصان جو آج سے 25 سال بعد امریکیوں کے سامنے آئے گا، ماہرین نے خطرے کی گھنٹی بجادی
9/11 حملوں کا وہ خوفناک نقصان جو آج سے 25 سال بعد امریکیوں کے سامنے آئے گا، ماہرین نے خطرے کی گھنٹی بجادی

9/11 حملوں کا وہ خوفناک نقصان جو آج سے 25 سال بعد امریکیوں کے سامنے آئے گا، ماہرین نے خطرے کی گھنٹی بجادی

13082099_1687516464836383_1808046177_n

نیویارک(نیوزڈیسک) ورلڈ ٹریڈ سینٹر پر حملوں کو15سال ہونے کو آئے ہیں اور آج بھی اس کی ہولناک یادیںلوگوں کے دلوں میں تازہ ہیں۔شائد آپ سمجھ رہے ہوں گے کہ اس کے اثرات ختم ہوچکے ہیں لیکن آپ کا خیال غلط ہے جس کی وجہ ماہرین کی جانب سے پیش کیا جانے والا نیا نظریہ ہے جس میں انہوں نے کہا ہے کہ ان عمارتوں کو بنانے کے دوران جو میٹیریل (asbestos)استعمال ہوا تھا اس کےا اثرات ریسکیوٹیموں میں موجود افراد پر پڑا۔
asbestosایک ایسامیٹیریل ہے جو امریکہ میں بڑی عمارتوں کو بنانے کے دوران آگ سے محفوظ رہنے کے لئے استعمال کیا جاتا ہے لیکن جب ورلڈٹریڈ سینٹرکو آگ لگی تو یہ میٹیریل بھی جلنے لگا۔لوگوں کی جان بچانے کے لئے ریسکیوکی ٹیمیں یہاں پہنچ گئیں اور کئی دن تک آگ بجھانے اور ملبہ اٹھانے کا کام جاری رہا لیکن اس دوران اس میٹیریل کے جلنے سے ایسے زہریلے مادوں کا اخراج ہوا جو وہاں پر موجود افراد کے لئے انتہائی خطرناک تھاجبکہ ان ذرات کے پھیلنے کی وجہ سے مین ہیٹن میں بھی ماحولیاتی آلودگی بڑھ گئی۔امریکی ماحولیاتی تحفظ کی ایجنسی کاکہناہے کہ اس میٹیریل کے ذرات لوئر مین ہیٹن میں پھیل گئے تھے اور اس کی وجہ سے کینسر(mesothelioma)ہوجاتا ہے جو کہ 20سال میں ظاہر ہوتا ہے۔تشویشناک بات یہ ہے کہ ایک ریسکیو ورکر جو9/11کے دن گراﺅنڈ زیرو پر کام کررہا تھا 2006ءمیں اسی بیماری کی وجہ سے ہلاک ہوا۔ایک اور ریسکیوورکر 41سالہ ڈی بورا بھی اسی بیماری کی وجہ سے2004ءمیں مرگئی۔ماہرین صحت کاکہنا ہے کہ آنے والے سالوں میں کئی لوگ اس طرح کی بیماریوں کا شکار ہوکر موت کے منہ میں چلے جائیں گے۔ہاپکنس یونیورسٹی کے مطابق جو لوگ ریسکیو کے عمل میں بعد میں شریک ہوئے ان میں بھی اس طرح کی خطرناک سانس کی بیماریاں پائی گئیں۔

Comments are closed.

Scroll To Top