Home / Uncategorized / ’اربوں کی پراپرٹی تباہ اور انٹیلی جنس ایجنسی کو معلوم ہی نہیں کہ خادم رضوی کیا کرتا ہے‘
’اربوں کی پراپرٹی تباہ اور انٹیلی جنس ایجنسی کو معلوم ہی نہیں کہ خادم رضوی کیا کرتا ہے‘

’اربوں کی پراپرٹی تباہ اور انٹیلی جنس ایجنسی کو معلوم ہی نہیں کہ خادم رضوی کیا کرتا ہے‘

پاکستان کی عدالت عظمیٰ میں دو رکنی بینچ نے فیض آباد دھرنے سے متعلق از خود نوٹس کیس کی سماعت کی جس میں عدالت نے آئی ایس آئی کی جانب سے جمع کرائی گئی رپورٹ کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے اسے ‘غیر تسلی بخش’ قرار دیا۔

سپریم کورٹ میں جسٹس فائز عیسیٰ اور جسٹس مشیر عالم پر مبنی بینچ نے ڈپٹی اٹارنی جنرل سہیل محمود سے پوچھا کہ اس رپورٹ میں تحریک لبیک پاکستان کے سربراہ خادم حسین رضوی کے بارے میں مطلوبہ معلومات فراہم نہیں کی ہیں اور وہ کیسے اس رپورٹ پر مطمئن ہو سکتے ہیں۔

‘عدالت نے پوچھا تھا کہ پیسہ کہاں سے آرہا ہے، خادم رضوی کا ذریعہ معاش کیا ہے، کیا وہ سکول ٹیچر ہے، کاروبار کر رہا ہے یا چندے پر چلتا ہے؟

Comments are closed.

Scroll To Top