Home / Uncategorized / الیکشن 2018: ’سوچا کہ اگر ایک عورت ووٹ ڈال سکتی ہے تو وہ الیکشن میں کھڑی بھی ہو سکتی ہے’
الیکشن 2018: ’سوچا کہ اگر ایک عورت ووٹ ڈال سکتی ہے تو وہ الیکشن میں کھڑی بھی ہو سکتی ہے’

الیکشن 2018: ’سوچا کہ اگر ایک عورت ووٹ ڈال سکتی ہے تو وہ الیکشن میں کھڑی بھی ہو سکتی ہے’

خیبر پختونخوا کے گاؤں عُشیری درہ میں یہ یقینا ایک عجیب منظر ہے جہاں ایک خاتون سڑک پر آتے جاتے مردوں میں پمفلٹ تقسیم کر رہی ہیں۔ کبھی وہ کسی دکان کے پاس رکتی ہے اور وہاں موجود مرد حضرات کو بتاتی ہیں کہ وہ ان کی بہن ہیں اور ‘بہن کو ووٹ ملنا چاہیے’۔

Comments are closed.

Scroll To Top