Error. Page cannot be displayed. Please contact your service provider for more details. (11)

Home / Uncategorized / انڈونیشیا منشیات سمگلنگ میں گرفتار ذوالفقار کی سزائے موت موخر کرے: پاکستان
انڈونیشیا منشیات سمگلنگ میں گرفتار ذوالفقار کی سزائے موت موخر کرے: پاکستان

انڈونیشیا منشیات سمگلنگ میں گرفتار ذوالفقار کی سزائے موت موخر کرے: پاکستان

جکارتہ (ویب ڈیسک) انڈونیشیا میں ہیروئن سمگلنگ کرنے کے الزام میں پاکستانی شہری کو سزائے موت دی جانے کی تیاری جاری ہے۔ پاکستان نے انڈونیشیا سے 52 سالہ ذوالفقار علی کی سزائے موت موخر کرنے کی اپیل کی ہے۔

پاکستان کا موقف ہے کہ 2005ءمیں مجرم قرار دیئے گئے ذوالفقار علی کا ٹرائل شفاف نہیں ہوا۔ ذوالفقار کو 21 نومبر 2004ء کو گرفتار کیا گیا تھا۔ انڈونیشن حکام منشیات سمگلنگ میں مجرم قرار دیئے گئے 3 افراد کو فائرنگ سکواڈ کے سامنے کھڑا کرکے سزائے موت دینے کی تیاری کر رہے ہیں تاہم انکو سزائے موت دینے کی تاریخ ابھی طے نہیں کی گئی۔ علی ذوالفقار کے اہل خانہ کو اطلاع دی گئی ہے کہ اسے کسی بھی وقت سزائے موت دی جا سکتی ہے۔ جکارتہ میں پاکستانی ناظم الامور سید زاہد رضا نے کہا ہم ذوالفقار کی حکومت کو سزائے موت روکنے کیلئے انڈونیشیا کی حکومت کو خط لکھ رہے ہیں۔پاکستان کو تحفظات ہیں کہ ٹرائل شفاف نہیں ہوا۔ انہوں نے کہا انڈونیشیا کے تمام متعلقہ حکام سے رابطہ کر کے انہیں قائل کرنے کی کوشش کی گئی ہے کہ ٹرائل شفاف نہ تھا۔ ذوالفقار کو 300 گرام ہیروئن انڈونیشیا لے جانے کی کوشش میں مجرم قرار دیا گیا تھا۔

دوسری طرف پاکستانی انسانی حقوق گروپ ”جسٹس پراجیکٹ پاکستان“ نے بھی انڈونیشیا سے ذوالفقار علی کو معاف کرنے کی اپیل کی ہے۔ ایمنسٹی انٹرنیشنل نے بھی ذوالفقار پر فردجرم عائد کئے جانے پر شدید تشویش کا اظہار کیا تھا اور کہا تھا کہ گرفتاری کے ایک ماہ بعد تک اسے وکیل تک رسائی نہیں دی گئی تھی۔

Comments are closed.

Scroll To Top