Home / Uncategorized / ’آئین میں جوڈیشل مارشل لاء کا کوئی تصور نہیں‘
’آئین میں جوڈیشل مارشل لاء کا کوئی تصور نہیں‘

’آئین میں جوڈیشل مارشل لاء کا کوئی تصور نہیں‘

لاہور: چیف جسٹس میاں ثاقب ثنار نے کہا ہے کہ آئین میں جوڈیشل مارشل لاء کا کوئی تصور نہیں اور پاکستان میں صرف جمہوریت کا ہی ہی طرز حکومت چلے گا۔

یوم پاکستان کے موقع پر لاہور کے کیتھڈرل چرچ میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ جب تک میں مجود ہوں ملک میں مارشل لاء نہیں لگ سکتا اور اس یہاں مارشل لا نہ اندر سے ہے نہ ہی باہر سے آسکتا۔

انہوں نے کہا کہ لوگوں کے ووٹ کی قدر اور اہمیت ہے اور آزادانہ انتخابات میں جو حکومت بھی اس ملک میں قائم ہوگی وہ آٗئین اور قانون کی حکمرانی پر ہوگی۔

چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ پاکستان میں جمہوریت ڈی ریل نہیں ہونے دیں گے اور کوئی بھی غیر قانونی اور غیر آئینی اقدام برداشت نہیں کیا جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں صرف آئین کی پاسداری ہوگی اور ایک منصف کا کردار ہے کہ وہ ملک میں کسی غیر آئینی اقدام کو برداشت نہیں کرے۔

Comments are closed.

Scroll To Top