Home / Uncategorized / ’جب پولیس نے یتیم کی رخصتی کروائی‘
’جب پولیس نے یتیم کی رخصتی کروائی‘

’جب پولیس نے یتیم کی رخصتی کروائی‘

گذشتہ دنوں ضلع بہاولپور کی پولیس نے ڈاکوؤں سے مقابلے میں ہلاک ہونے والے کانسٹیبل کی بیٹی کی رخصتی کے اخراجات بطور پولیس فورس کے اٹھائے اور پولیس کے اس اقدام کو سوشل میڈیا پر کافی سراہا جا رہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب ہولیس کے کانسٹیبل محمد لطیف کی صاحبزادی کی شادی کی باری آئی تو وسائل کی کمی کی وجہ سے شادی کرنا محمد لطیف کی بیوہ کے لیے مشکل تھا۔

اس موقع پر مقامی پولیس کے ضلعی سربراہ مستنصر فیروز نے تمام ضلعے کی پولیس کی مدد سے اس شادی کے تمام انتظامات اپنے ذمے لیے۔

محمد لطیف بہاولپور کے سیٹلائٹ ٹاؤن میں ایک ڈکیتی کی واردت سے نمٹنے کے دوران اپنی جان سے گئے جس کے بعد ان کے لواحقین کو ان کی تنخواہ اور دوسرے الاؤنسز تو ملتے رہے مگر شادی کا خرچ ان کی بساط سے بہت بڑھ گیا تھا۔

محمد لطیف کی صاحبزادی تہمینہ لطیف کی شادی کی تقریب 17 مارچ کو بہاولپور میں انجام پائی جس میں ریجنل پولیس آفیسر بہاولپور سمیت ضلعے کی پولیس کے تمام اہلکاروں نے شرکت کی انہیں اپنے ہاتھوں سے رخصت کیا۔

Comments are closed.

Scroll To Top