Home / Uncategorized / قسمت نے کہاں آ کر ساتھ چھوڑا؟
قسمت نے کہاں آ کر ساتھ چھوڑا؟

قسمت نے کہاں آ کر ساتھ چھوڑا؟

ذرا سوچیے اس کرکٹر پر کیا گزرتی ہوگی جسے پاکستان کی ٹیسٹ کیپ سر پر سجانے کی نوید سنائی گئی لیکن میدان میں اترنے سے پہلے ہی اسے یہ سننے کو مل گیا کہ وہ یہ میچ نہیں کھیل رہا ہے۔

پاکستانی کرکٹ کی تاریخ میں ایسے متعدد کرکٹرز موجود ہیں جن کے لیے ٹیسٹ کھیلنے کی خوشخبری محض چند لمحے کی خوشی ہی ثابت ہوئی۔

عبدالرقیب کا شمار پاکستانی فرسٹ کلاس کرکٹ کے چند کامیاب ترین لیفٹ آرم سپنرز میں ہوتا ہے۔

وہ سنہ 1979-80 میں آصف اقبال کی قیادت میں انڈیا کا دورہ کرنے والی پاکستانی ٹیم میں شامل تھے۔

Comments are closed.

Scroll To Top